شاعری — سلیمان جاذب

الواداعی بوسہ
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

الواداعی بوسہ سلگتے صحرا کے جب سفر پر میں گھر سے نکلا تو میری ماں نے یوں میرے ماتھے پہ ہونٹ رکھے تھے اُس نے ایسے دیا تھابوسہ کہ میرے سارے بدن میں جس نے مہک میں ڈوبا دھنک سا رنگین پیار اَمرت سا بھر دیا تھا مجھے جو سرشار کر گیاتھا فضا میں خاموش […]

مکمل تحریر پڑھیے »

کاش
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

کاش کاش وہ رات بھی کبھی آئے چاند جب آسماں پہ روشن ہو میرے آنگن میں تو اُتر آئے چاندنی یوں سمیٹ لے مجھ کو تیری خوشبو لپیٹ لے مجھ کو میں تیری ذات میں سما جاؤں اور تری روح میں اتر جاؤں میری سانسوں میں تیری خوشبو ہو تیرا پیکر ہی میرے ہر سو […]

مکمل تحریر پڑھیے »

آس کا دیپ جلایا پھر آج
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

آس کا دیپ جلایا پھر آج اک گھروندا سا بنایا پھر آج تیرے گاؤں سی تھی ساری گلیاں دل نے اِک شہر بسایا پھر آج بھول جانے کی اُسے بھول ہوئی مجھ سے بچھڑا مِرا سایہ پھر آج تذکرہ اُس کا جو لے بیٹھے ہو اور اگر اس نے جگایا پھر آج فون بھی بند […]

مکمل تحریر پڑھیے »

کیسے رستے ہیں نگر کیسا ہے
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

کیسے رستے ہیں نگر کیسا ہے زندگانی کا سفر کیسا ہے تم تو اُس گاؤں سے ہو آئے ہو گاؤں کیسا ہے وہ گھر کیسا ہے خار پتوں کی طرح اُگتے ہیں یہ عداوت کا شجر کیسا ہے جیت کانشہ تو ہے اپنی جگہ ہار جانے کا ہنر کیسا ہے رات ، تنہائی کے صحرا […]

مکمل تحریر پڑھیے »

شام جب جب قریب ہوتی ہے
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

شام جب جب قریب ہوتی ہے دل کی حالت عجیب ہوتی ہے دل بہلتا ہے دید تیری سے کس کو فکرِ طبیب ہوتی ہے جب مرے رُوبُرو تُو ہوتا ہے ساری دنیا رقیب ہوتی ہے نوجوانی کے خواب کیا کہنا ہر تمنا عجیب ہوتی ہے چاند کو دیکھنے سے اے جاذب چاندنی کب نصیب ہوتی […]

مکمل تحریر پڑھیے »

نگاہیں بھی ہم سے چراتے رہے
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

نگاہیں بھی ہم سے چراتے رہے مگر زیرِلب مُسکراتے رہے مُکمل نہ کر پائے تصویر ہم بناتے رہے اور مٹاتے رہے اُڑی تھی خبر آج آئیں گے وہ ستارے بھی سب جگمگاتے رہے گلوں کی طرف ہاتھ بڑھتا ہی کیوں ؟ گُلِستاں سے کانٹے ہٹاتے رہے جو ہیں در بدر کوئی شکوہ نہیں کہ ساحِل […]

مکمل تحریر پڑھیے »

اپنے قابو میں دل نہیں تب سے
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

اپنے قابو میں دل نہیں تب سے تجھ کو دیکھا ہے اِک نظر جب سے تیرا انداز ہر کسی سے الگ اور مرا راستہ جدا سب سے پھول مجھ کو وہ خوش نما سا لگے چھو گیا جو ترے حسیں لب سے بات سنتا نہیں یہاں کوئی بات کرنا ہے اب نئے ڈھب سے شہر […]

مکمل تحریر پڑھیے »

الوداع اس کو یوں کہا میں نے
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

الوداع اس کو یوں کہا میں نے خود سے خود کو جدا کیا میں نے ماننا دل کا فیصلہ ہے اب کر لیا ہے یہ فیصلہ میں نے مشکلوں سے جسے قریب کیا عُجلتوں میں گنوا دیا میں نے کتنے نزدیک سے اُسے دیکھا درمیاں رکھ کے فاصلہ میں نے ایک چپ کام کر گئی […]

مکمل تحریر پڑھیے »

برسوں کا شناسا بھی شناسا نہیں لگتا
admin نے Thursday، 3 September 2009 کو شائع کیا.

برسوں کا شناسا بھی شناسا نہیں لگتا کچھ بھی دمِ ہجراں مجھے اچھا نہیں لگتا کر لوں میں یقیں کیسے کہ بدلہ نہیں کچھ بھی لہجہ ہی اگر آپ کا لہجہ نہیں لگتا اک تیرے نہ ہونے سے ہوا حال یہ دل کا بستی میں کوئی شخص بھی اپنا نہیں لگتا کاغذ سے وہ مانوس […]

مکمل تحریر پڑھیے »


جملہ حقوق بحق "نوائے ادب" محفوظ ہیں.
ورڈ پریس "نوائے ادب تھیم" منجانب م بلال م